Terrorism News/Incidents in Pakistan


#1341

Bas kardo yaar...

This thread should be close IMHO.


#1342

^I also agree with Attock, there might not be other way to stop this propaganda @#$%@#.

Only thing now i can say USStatedepartment is high on "مینوں نوٹ وکھا میرا موڈ بنے"

For him Allama Iqbal said:

poetry.gif

i just can't resist:



#1343

[quote=“Ahmsun, post:1342, topic:8084”]

Only thing now i can say USStatedepartment is high on "مینوں نوٹ وکھا میرا موڈ بنے"

[/quote]

Nailed it!


#1344

[quote=“Ahmsun, post:1335, topic:8084”]

and you should also stop licking their B@ll$, or you'll also be one day used as collateral damage :D OR

branded as Al-Qaeda or ISIS informant and put into Guantanamobay and you know what happens there. B)

[/quote]

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم کے ممبر کی حيثيت سے مختلف اردو فورمز پر مجھ سے سب سے زيادہ سوال اسی حوالے سے کيے گۓ ہيں۔ ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم نے کئ برس قبل گوانتاناموبے کا باقاعدہ دورہ کيا تھا جس ميں ہم نے وہاں پر قيديوں کے حالات زندگی کا از خود مشاہدہ کيا اس حوالے سے ميں نے اپنے مشاہدات کچھ فورمز پر پوسٹ بھی کيے تھے۔ جو ذيل ميں پيش خدمت ہيں۔

گوانتاناموبے ميں قيديوں کے ساتھ غيرانسانی سلوک؟

ميڈيا خاص طور پر انٹرنيٹ پر اس حوالے سے بے شمار تصاوير سب نے دیکھی ہيں۔ پاکستان ميں عام تاثر يہ ہے کہ سينکڑوں کی تعداد ميں پاکستانی اس مقام پر امریکی فوجیوں کے غير انسانی سلوک کا شکار ہيں۔ يہ تاثر بھی عام ہے کہ ان قيدیوں کے تمام انسانی حقوق معطل ہيں اور انہيں کسی بھی قسم کی قانونی چارہ جوئ کا اختيار نہيں ہے۔

حقيقت يہ ہے کہ گوانتاناموبے ميں اس وقت قيدیوں کی تعداد 70 سے کم ہے جن کا تعلق مختلف ملکوں سے ھے۔ ان ميں موجود پاکستانيوں کی تعداد دس سے کم ہے ۔يہ کہنا کہ وہاں پر سينکڑوں کی تعداد ميں پاکستانی موجود ہيں حقيقت کے منافی ہے۔ اس کے علاوہ قيديوں کودو مختلف کيٹيگريوں ميں تقسيم کيا گيا ہے اور اسی حوالے سے انہیں دو مختلف رنگوں کی يونيفارم دی گئ ہيں۔ اورنج (مالٹا) يونيفارم ميں ملبوس جن قيديوں کی تصاویر آپ انٹرنيٹ پر ديکھتے ہيں وہ گوانتاناموبے ميں قيديوں کی صرف ايک کيٹيگری کی ہیں۔ يہ وہ کيٹيگری ہے جو تخريب کاری کی انتہاہی سنگين کاروائيوں ميں ملوث ہونے کے علاوہ جيل حکام پر حملے بھی کر چکے ہيں۔

وہ قيدی جو قواعد وضوابط کی پابندی کرتے ہيں انہيں دن ميں 12 گھنٹے فٹ بال، باسکٹ بال، جاگنگ اور جم کی سہوليات دستياب ہيں۔ تمام مسلمان قيديوں کو ایک مسلم کٹ دی جاتی ہے جس ميں قرآن پاک، جاہ نماز اور تسبيح شامل ہوتی ہے۔ مسلمانوں کو دن ميں تين بار حلال کھانا ديا جاتا ہے جس کا يوميہ خرچہ وہاں تعنيات فوجيوں کے يوميہ خرچے سے زيادہ ہوتا ہے۔ 5 ہزار سے زائد کتابوں کی ايک لائبريری بھی موجود ہے جس ميں صحيح بخاری اور صحيح مسلم سميت بےشمار مذہبی کتابيں شامل ہيں۔ يہاں پر تعنيات فوجيوں کو قرآن پاک کو ہاتھ لگانے کی اجازت نہيں ہے۔ يہ ذمہ داری وہاں پر کام کرنے والے مسلم لائيبريرين ادا کرتے ہيں- قيديوں کے ليے تعليم کی سہولت بھی ہے جہاں انہيں عربی،پشتو اور انگريزی کی تعليم دی جاتی ہے۔ اس کے علاوہ دن کے مخصوص اوقات میں قيديوں کو ٹی وی ديکھنے کی بھی اجازت ہے۔

اس کے علاوہ يہاں پر 20 بستروں پر مشتمل ايک مکمل ہسپتال بھی ہے جو کہ واشنگٹن ميں واقع امريکی نيوی کے ہسپتال سے براہراست منسلک ہے۔ يہاں پر 100 کے قريب ڈاکٹرز اور نرسز بھی تعنيات ہيں۔ اس ہسپتال کے مختلف شعبہ جات ميں ايک ريڈيالوجی ليب، فارميسی اور آپريشن تھيٹر کے علاوہ ڈينٹل کلينک بھی شامل ہيں۔

انٹرنيشنل ريڈکراس اور ان قيديوں کی نمايندگی کرنے والے وکيل باقاعدگی سے گوانتاناموبے کا دورہ کرتے ہيں اور قيديوں کے حوالے سے اپنی رپورٹ پيش کرتے ہيں۔، انٹرنيشنل ميڈيا کی کئ ٹيميں بھی يہاں پر کئ بار آ چکی ہيں۔ 2006 ميں يورپی پارليمنٹ کے ارکان پر مشتمل ايک گروپ نے بھی گوانتاناموبے کا دورہ کيا اور انھوں نے جو رپورٹ پيش کی اس کے مطابق " گوانتاناموبے ميں قيدیوں کو دی جانے والی سہوليات يورپ کی کئ جيلوں سے بہتر ہيں"۔

ميں ہرگز يہ دعوی نہيں کر رہا کہ گوانتاناموبے آسائشوں سے بھرپور کوئ تفريح کی جگہ ہے بلکہ صرف يہ باور کروانا چاہتا ہوں کہ وہاں پر قيديوں سے غير انسانی سلوک سے متعلق جو بے شمار داستانيں آپ انٹرنيٹ پر پرھتے ہيں وہ حقائق پر مبنی نہيں ہيں۔

آخر ميں ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم کی جانب سے بناۓ جانے والی کچھ تصاوير اور ايک فلم کا لنک آپ کو دے رہا ہوں جو کہ اگرچہ عربی ميں ہے ليکن اس ميں دکھاۓ جانے والے مناظر آپ کو گوانتاناموبے کے حوالے سے تصوير کا دوسرا رخ سمجھنے ميں مدد ديں گے۔

http://youtube.com/watch?v=UewZeSOD-vg

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

digitaloutreach@state.gov

www.state.gov

http://www.facebook.com/USDOTUrdu


#1345

o yeah!
you took in those so-called terrorists to give them luxury of their life!

Obviously my dear brother you are idiot.

معذرت کے ساتھ ایسی گندی تصویر کا دوسرا رخ ہم نہیں دیکھنا چاہتے،

All these people protesting against guantanamo bay are insane or bigots who just like to protest,
یا پھر ان لوگوں کو گرمی میں لو لگ گئی ہے

QK9It.So.56.jpeg

Source: http://www.miamiherald.com/news/article1924048.html

guantanamo-bay-protest-600x376.jpg

http://www.occupycorporatism.com/report-dod-cia-forced-doctors-participate-torture-detainees/

Broken-Promises-Cage1-300x225.jpeg

http://blog.gitmomemory.org/2012/10/17/where-does-a-nations-power-reside/

And of course the internet lies, this is why you are here. :)
And so does washington post lie about force feeding :

[quote=", post:, topic:"]

Attorneys: Guantanamo Bay force-feeding practices akin to ‘torture’

Attorneys for a hunger-striking detainee at the U.S. prison at Guantanamo Bay, Cuba, said in court filings Friday that the manner in which military officials are force-feeding their client is akin to “torture” and a federal judge should order them to use what they view as more humane practices.
[/quote]

Source: http://www.washingtonpost.com/world/national-security/attorneys-guantanamo-bay-force-feeding-practices-akin-to-torture/2014/10/17/c7b60318-560c-11e4-809b-8cc0a295c773_story.html

And also about waterboarding, electric torture and sleep deprivation and every thing:

[quote=", post:, topic:"]

WASHINGTON — When the Bush administration revealed in 2005 that it was secretly interpreting a treaty ban on “cruel, inhuman or degrading treatment” as not applying to C.I.A. and military prisons overseas, Barack Obama, then a newly elected Democratic senator from Illinois, joined in a bipartisan protest.
[/quote]

wow they were above law!!!!! and mankind!!!!!!! and #$%# geneva convention! horah!
http://www.nytimes.com/2014/10/19/us/politics/obama-could-reaffirm-a-bush-era-reading-of-a-treaty-on-torture.html?_r=4


A humble request: get rid of your existence.

Above all Do NOT forget ABU GHURAIB!


#1346

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

digitaloutreach@state.gov

www.state.gov

http://www.facebook.com/USDOTUrdu


#1347

[quote=“Ahmsun, post:1345, topic:8084”]

Above all Do NOT forget ABU GHURAIB!

[/quote]

#1348

Where is the *ignore* option in this forum?


#1349

Yes, I am missing such an option as well, that will allow me to easily ignore such 'paid crap'.


#1350

[quote=“attock, post:1348, topic:8084”]

Where is the *ignore* option in this forum?

[/quote]

Here you go: http://www.wiredpakistan.com/index.php?app=core&module=usercp&tab=core&area=ignoredusers


#1351

[quote=“Asad, post:1350, topic:8084”]

Here you go: http://www.wiredpakistan.com/index.php?app=core&module=usercp&tab=core&area=ignoredusers

[/quote]

LMAO .... sometimes I do love you Asad :D

[quote="USStateDepartment, post:1347, topic:8084"]

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

جب آپ ابوغريب ميں امريکی فوجيوں کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزيوں کے واقعات کا ذکر کرتے ہيں تو آپ يہ کيوں بھول جاتے ہيں کہ وہ بھی امريکی فوجی ہی تھے جنھوں نے اپنے ساتھيوں کی بدسلوکی کے بارے ميں حکام کو آگاہ کيا تھا؟ صرف يہی نہيں بلکہ ان امريکی فوجيوں نے اپنے ہی ساتھيوں کے خلاف مقدمات ميں گواہی بھی دی اور انھی کی کوششوں کی وجہ سے ان جرائم ميں ملوث فوجيوں کے خلاف باقاعدہ مقدمے بنے اور انھيں سزائيں بھی مليں۔

http://www.usatoday.com/news/nation/2005-09-26-england_x.htm

http://news.bbc.co.uk/2/hi/middle_east/3669331.stm

http://www.usatoday.com/news/world/iraq/2005-01-06-graner-court-martial_x.htm

http://www.csmonitor.com/2007/0821/p99s01-duts.html

امريکی حکومت نے يہ تسليم کيا ہے کہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے حوالے سے امريکی آرمی کا ريکارڈ مثالی نہيں ہے۔ ليکن يہ بھی حقيقت ہے کہ تاريخ انسانی کی ہر فوج ميں ايسے افراد موجود رہے ہيں جنھوں نے قواعد وضوابط کی خلاف ورزی کی اور قانون توڑا۔ اہم بات يہ ہے ہر اس امريکی فوجی کے خلاف تفتيش بھی کی گئ اور اسے ملٹری کورٹ کے سامنے لايا گيا جس پر اس حوالے سے الزامات لگے۔ ايسے کئ کيسز امريکی عوام کے سامنے بھی لاۓ گۓ۔ ليکن يہ تمام واقعات کسی منظم سسٹم کے تحت نہيں رونما نہيں ہوۓ تھے بلکہ کچھ افراد کے انفرادی عمل کا نتيجہ تھے۔ يہ لوگ امريکی فوج کی اکثريت کی ترجمانی نہيں کرتے۔

ميں نے يہ بات پہلے بھی کہی ہے اور امريکی صدر سميت اہم امريکی اہلکاروں نے بھی اس

بات کو دہرايا اور دنيا بھر کے ميڈيا کے سامنے بھی اس بات کا اعادہ کيا گيا ہے کہ ابوغراب کا واقعہ عام امريکيوں اور امريکی حکومت کے ليے انتہائ افسوس ناک تھا جس کی سب نے نہ صرف يہ کہ بھرپور مزحمت کی بلکہ اس واقعے ميں شامل تمام افراد کا ٹرائل ہوا اور انھيں قانون کے مطابق سزائيں دی گئيں۔ آپ دنيا کے کتنے ممالک کے بارے ميں يہ دعوی کر سکتے ہيں کہ جہاں حکومت کی جانب سے فوجيوں کے کردار اور ان کے اعمال کا اس طرح احتساب کيا جاتا ہے؟

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

digitaloutreach@state.gov

www.state.gov

http://www.facebook.com/USDOTUrdu

[/quote]

Well done fawad!


#1352

^ Duuuude....!!!!


#1353

^

What...?


#1354

I think I should contact USStateDepartment and complain about "واد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم"

Wasting my tax dollars sitting on this forum.


#1355

[quote=“Ahmsun, post:1345, topic:8084”]

o yeah!

you took in those so-called terrorists to give them luxury of their life!

Obviously my dear brother you are idiot.

معذرت کے ساتھ ایسی گندی تصویر کا دوسرا رخ ہم نہیں دیکھنا چاہتے،

All these people protesting against guantanamo bay are insane or bigots who just like to protest,

یا پھر ان لوگوں کو گرمی میں لو لگ گئی ہے

QK9It.So.56.jpeg

Source: http://www.miamiherald.com/news/article1924048.html

guantanamo-bay-protest-600x376.jpg

http://www.occupycorporatism.com/report-dod-cia-forced-doctors-participate-torture-detainees/

Broken-Promises-Cage1-300x225.jpeg

http://blog.gitmomemory.org/2012/10/17/where-does-a-nations-power-reside/

And of course the internet lies, this is why you are here. :)

And so does washington post lie about force feeding :

Source: http://www.washingtonpost.com/world/national-security/attorneys-guantanamo-bay-force-feeding-practices-akin-to-torture/2014/10/17/c7b60318-560c-11e4-809b-8cc0a295c773_story.html

And also about waterboarding, electric torture and sleep deprivation and every thing:

wow they were above law!!!!! and mankind!!!!!!! and #$%# geneva convention! horah!

http://www.nytimes.com/2014/10/19/us/politics/obama-could-reaffirm-a-bush-era-reading-of-a-treaty-on-torture.html?_r=4

A humble request: get rid of your existence.

Above all Do NOT forget ABU GHURAIB!

[/quote]

#1356

[quote=“Faisal, post:1353, topic:8084”]

^

What...?

[/quote]

#1357

A good, well written and easily digestible article is always worth a read especially when it speaks the truth.

From: http://journal-neo.org/2014/10/25/the-us-adventurism-in-the-middle-east-and-its-consequences/

[quote=", post:, topic:"]

The US Adventurism in the Middle East and its Consequence

Since at least 1980, the US has been invading, occupying and bombing the Middle East. The rhetoric invented to give justification to this adventurism was and still is based upon notions of promoting democracy and ensuring peace and stability. However, what we see on the ground today are wars and protracted violence, authoritarianism and fast spreading militancy, which has grown so formidable as to threaten the Post-Ottoman order created by European imperialists — chiefly the British — after World War I.

Contrary to the invented rhetoric, oil — not freedom, democracy or human rights —actually have always been defining the principal US interest; and, military power has since then been offering the most suitable means by which the US could attain this goal. In straightforward political terms, this strategy meant dismantling a country with the aim of erecting something more preferable — “regime change” as a prelude to “nation building.”

Contrary to the US’ expectations, the policy of regime change has, over the years and time and again, proved to be disastrous. Instead of becoming vessel states for the US, new regimes directly resulted in creating deep power vacuums. Iraq offers a glaring example. Although studiously ignored by Washington, post-Gaddafi Libya offers a second. And unless the gods are in an exceptionally generous mood, Afghanistan will probably become a third example whenever the US and NATO combat troops would finally depart.

...

[/quote]

#1358

[quote=“SupMA5TER, post:1357, topic:8084”]

Contrary to the invented rhetoric, oil — not freedom, democracy or human rights —actually have always been defining the principal US interest; and, military power has since then been offering the most suitable means by which the US could attain this goal. In straightforward political terms, this strategy meant dismantling a country with the aim of erecting something more preferable — “regime change” as a prelude to “nation building.”

[/quote]

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

تيل پر قبضے کی امريکی سازشيں

يہ وہ نقطہ ہے جس کو بنياد بنا کر پاکستانی ميڈيا ميں بہت کچھ لکھا گيا ہے۔ آپ نے بھی جس کالم کا حوالہ پيش کيا ہے اس کا لب لباب بھی يہی ہے کہ عراق پر حملہ بلکہ افغان جنگ کو بھی عراق کے تیل پر امريکی قبضے کی ايک عالمگير سازش قرار ديا جانا چاہيے۔ ستم ظريفی ديکھيں کہ يہ تاثر بھی ديا جاتا ہے کہ امريکہ حکومت کے صدام حسين کے ساتھ دیرينہ تعلقات رہے ھيں۔ اور پھر يہ دليل بھی دی جاتی ہے کہ امريکہ نے عراق پر تيل کے ليے حملہ کيا۔ اگر امریکہ کے صدام کے ساتھ تعلقات اتنے ہی ديرينہ تھے تو اسےاربوں ڈالرز کی لاگت سے جنگ شروع کر کے اپنے ہزاروں فوجی جھونکنے کی کيا ضرورت تھی۔ امريکہ کے ليے تو آسان راستہ يہ ہوتا کہ وہ صدام کے توسط سے تيل کی درآمد کے معاہدے کرتا۔

اس حوالے سے ميں نے يو – ايس – اسٹيٹ ڈيپارٹمنٹ سے جو اعداد وشمار حاصل کيے ہيں وہ آپ کے سامنے رکھ کر ميں فيصلہ آپ پر چھوڑتا ہوں کہ سچ کيا ہے اور افسانہ کيا ہے۔

سال 2006 ميں ہاورڈ ميگزين نے ايک تحقيقی کالم لکھا جس کی رو سے عراق جنگ پر امريکہ کے مالی اخراجات کا کل تخمينہ 2 ٹرلين ڈالرز لگايا گيا ہے۔ اگر ان اخراجات کا مقابلہ عراق ميں تيل کی مجموعی پیداوار سے لگايا جاۓ تو يہ حقيقت سامنے آتی ہے کہ عراق پر امریکی حکومت کے اخراجات عراق کی مجموعی پيداوار سے کہيں زيادہ ہيں۔ لہذا معاشی اعتبار سے يہ دليل کہ عراق پر حملہ تيل کے ليے کيا گيا تھا، بے وزن ثابت ہو جاتی ہے۔ ہاورڈ ميگزين کے اس آرٹيکل کا ويب لنک پيش کر رہا ہوں-

harvardmagazine.com/2006/05/the-2-trillion-war.html

ايک اور تاثر جو کہ بہت عام ہے اور اس کو بنياد بنا کر پاکستانی ميڈيا ميں بہت کچھ لکھا جاتا ہے وہ يہ ہے کہ امريکہ میں تيل کے استعمال کا مکمل دارومدار عرب ممالک سے برامد کردہ تيل کے اوپر ہے لہذا امريکی حکومت عرب ممالک اور اس کی حکومتوں پر اپنا اثرورسوخ بڑھانا چاہتی ہے۔ اس حوالے سے کچھ اعداد وشمار پيش خدمت ہيں۔

امریکہ اس وقت دنيا ميں تيل کی مجموعی پيداوار کے حساب سے تيسرے نمبر پر ہے۔ 1973 سے 2007 تک کے درميانی عرصے ميں امريکہ نے تيل کی مجموعی ضروريات کا 57 فيصد حصہ خود پورا کيا ہے۔ باقی 43 فيصد ميں سے صرف 8 فيصد تيل کا استعمال گلف ممالک کے تيل پر منحصر ہے۔ مغربی ممالک سے تيل کے استعمال کا 20 فيصد حصہ پورا کيا جاتا ہے اور 15 فيصد تيل کی ضروريات توانائ کے ديگر ذرائع سے پوری کی گئ۔

Screen_Shot_2014_10_27_at_12_00_12_PM.pn

جہاں تک تيل کی درآمد کا تعلق ہے تو 1973 سے 2007 کے درميانی عرصے ميں امريکہ نے تيل کی مجموعی درآمد کا 47 فيصد حصہ مغربی ممالک سے درآمد کيا جو کہ امريکہ ميں تيل کے استعمال کا 20 فيصد ہے۔ اسی عرصے ميں 34 فيصد افريقہ، يورپ اور سابق سوويت يونين سے درآمد کيا گيا جو کہ امريکہ ميں تيل کے استعمال کا 15 فيصد بنتا ہے۔ گلف ممالک سے درآمد کردہ تيل کا تناسب صرف 19 فيصد رہا جو کہ مجموعی استعمال کا محض 8 فيصد ہے۔

Screen_Shot_2014_10_27_at_12_00_19_PM.pn

اسی حوالے سے اگر آپ دنيا کے ديگر ممالک کا گلف مما لک کے تيل پر انحصار اور اس حوالے سے اعدادوشمار ديکھیں تو يہ حقيقت سامنے آتی ہے کہ جاپان امريکہ کے مقابلے ميں گلف ممالک کے تيل پر کہيں زيادہ انحصار کرتا ہے۔ 1992 سے 2006 کے درميانی عرصے ميں جاپان نے اوسطا 65 سے 80 فيصد تيل گلف ممالک سے درآمد کيا۔ اس کے علاوہ گزشتہ چند سالوں ميں امريکہ کے مقابلہ ميں جاپان کا گلف ممالک پر انحصار بتدريج بڑھا ہے۔ مندرجہ ذيل گراف سے يہ بات واضح ہے کہ گزشتہ چند سالوں ميں امريکہ کا گلف ممالک کے تيل پر انحصار مسلسل کم ہوا ہے۔

Screen_Shot_2014_10_27_at_12_00_27_PM.pn

يہاں يہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ امريکی حکومت بذات خود تيل کی خريدوفروخت کے عمل ميں

فريق نہيں ہوتی۔ بلکہ امريکہ کی نجی کمپنياں اپنے صارفين کی ضروريات کے تناسب سے سروس فراہم کرتی ہيں۔ امريکی کمپنياں انٹرنيشنل مارکيٹ ميں متعين کردہ نرخوں پر عراق سے تيل درآمد کرتی ہيں جو کہ عراق سے برآمد کيے جانے والے مجموعی تيل کا محض ايک چوتھائ حصہ ہے۔ باقی ماندہ تيل عراقی حکومت کی زير نگرانی ميں نا صرف دوسرے ممالک ميں برآمد کيا جاتا ہے بلکہ عراق کی مجموعی توانائ کی ضروريات پوری کرنے پر صرف ہوتا ہے۔ عراق تيل کے توسط سے ماہانہ 2 بلين ڈالرز سے زيادہ کا زرمبادلہ حاصل کرتاہے۔

ان اعداد وشمار کی روشنی ميں يہ بات واضح ہو جاتی ہے کہ يہ تاثر دينا کہ امريکہ عراق ميں تيل کے ذخائر پر قبضہ کرنے کے منصوبے پر عمل پيرا ہے يا امريکہ تيل کی سپلائ کے ليے سارا دارومدار عرب ممالک کے تيل پر کرتا ہے قطعی بے بنياد اور حقيقت سے روگردانی کے مترادف ہے۔

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

digitaloutreach@state.gov

www.state.gov

http://www.facebook.com/USDOTUrdu


#1359

QadtIEN.png


#1360

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

digitaloutreach@state.gov

www.state.gov

http://www.facebook.com/USDOTUrdu